بیچتا ہے ہاشمی ناموسِ دینِ مصطفیؐ

بیچتا ہے ہاشمی ناموسِ دینِ مصطفیؐ خاک و خُوں میں مِل رہا ہے ترکمانِ سخت کوش اس شعر میں حضرت اقبال علیہ رحمہ نے خاص اس واقعہ کی طرف اشارہ کیا ہے، جب ہاشمی خاندان کے ایک فرزند حسین ابن علی ہاشمی نے انگریزوں کے ساتھ مل کر عثمانیوں (ترکوں) کے خلاف بغاوت کر دی …

بیچتا ہے ہاشمی ناموسِ دینِ مصطفیؐ Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 16 تشریح

یارب! یہ جہان گزراں خوب ہے لیکن کیوں خوار ہیں مردان صفا کیش و ہنرمند گو اس کی خدائی میں مہاجن کا بھی ہے ہاتھ دنیا تو سمجھتی ہے فرنگی کو خداوند تو برگ گیا ہے ندہی اہل خرد را او کشت گل و لالہ بنجشد بہ خرے چند حاضر ہیں کلیسا میں کباب و …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 16 تشریح Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 15 تشریح

اک دانش نورانی ، اک دانش برہانی ہے دانش برہانی ، حیرت کی فراوانی اس پیکر خاکی میں اک شے ہے ، سو وہ تیری میرے لیے مشکل ہے اس شے کی نگہبانی اب کیا جو فغاں میری پہنچی ہے ستاروں تک تو نے ہی سکھائی تھی مجھ کو یہ غزل خوانی ہو نقش اگر …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 15 تشریح Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 14 تشریح

اپنی جولاں گاہ زیر آسماں سمجھا تھا میں آب و گل کے کھیل کو اپنا جہاں سمجھا تھا میں بے حجابی سے تری ٹوٹا نگاہوں کا طلسم اک ردائے نیلگوں کو آسماں سمجھا تھا میں کارواں تھک کر فضا کے پیچ و خم میں رہ گیا مہروماہ و مشتری کو ہم عناں سمجھا تھا میں …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 14 تشریح Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 13 تشریح

وہی میری کم نصیبی ، وہی تیری بے نیازی میرے کام کچھ نہ آیا یہ کمال نے نوازی میں کہاں ہوں تو کہاں ہے ، یہ مکاں کہ لامکاں ہے؟ یہ جہاں مرا جہاں ہے کہ تری کرشمہ سازی اسی کشمکش میں گزریں مری زندگی کی راتیں کبھی سوزو ساز رومی ، کبھی پیچ و …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 13 تشریح Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 12 تشریح

ضمیر لالہ مے لعل سے ہوا لبریز اشارہ پاتے ہی صوفی نے توڑ دی پرہیز بچھائی ہے جو کہیں عشق نے بساط اپنی کیا ہے اس نے فقیروں کو وارث پرویز پرانے ہیں یہ ستارے ، فلک بھی فرسودہ جہاں وہ چاہیے مجھ کو کہ ہو ابھی نوخیز کسے خبر ہے کہ ہنگامہ نشور ہے …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 12 تشریح Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 11 تشریح

تجھے یاد کیا نہیں ہے مرے دل کا وہ زمانہ وہ ادب گہ محبت ، وہ نگہ کا تازیانہ یہ بتان عصر حاضر کہ بنے ہیں مدرسے میں نہ ادائے کافرانہ ، نہ تراش آزرانہ نہیں اس کھلی فضا میں کوئی گوشہء فراغت یہ جہاں عجب جہاں ہے ، نہ قفس نہ آشیانہ رگ تاک …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 11 تشریح Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 10 تشریح

متاع بے بہا ہے درد و سوز آرزو مندی مقام بندگی دے کر نہ لوں شان خداوندی ترے آزاد بندوں کی نہ یہ دنیا ، نہ وہ دنیا یہاں مرنے کی پابندی ، وہاں جینے کی پابندی حجاب اکسیر ہے آوارہ کوئے محبت کو میری آتش کو بھڑکاتی ہے تیری دیر پیوندی گزر اوقات کر …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 10 تشریح Read More »

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 9 تشریح

مٹا دیا مرے ساقی نے عالم من و تو پلا کے مجھ کو مے لا الہ الا ھو’ نہ مے ،نہ شعر ، نہ ساقی ، نہ شور چنگ و رباب سکوت کوہ و لب جوے و لالہ خود رو! گدائے مے کدہ کی شان بے نیازی دیکھ پہنچ کے چشمہ حیواں پہ توڑتا ہے …

بال جبریل(حصہ اول)نمبر 9 تشریح Read More »

Shopping Cart
Scroll to Top