علامہ اقبال کے اساتذہ

۱- ابو عبداللہ غلام حسن
علامہ اقبال کے سب سے پہلے استاد ابو عبداللہ غلام حسن تھے، جن سے علامہ اقبال تقریبا ایک سال قرآن کی تعلیم حاصل کرنے مسجد جایا کرتے تھے
۲- مولوی میر حسن
علامہ اقبال نے اپنی والدہ محترمہ کے بعد ابتدائی تعلیم ان ہی کی زیر نگرانی حاصل کی۔
– اسکاچ مشن ہائی سکول میں مولوی میر حسن کے علاوہ مندرجہ ذیل حضرات علامہ اقبال کے استاد رہے
۳- سکول کے ہیڈ ماسٹر نارنجن داس
جو جنرل نالج پڑھاتے تھے۔
۴- ماسٹر ہرنام سنگھ
انگریزی، ریاضی، علم مساحت، حفظان صحت اور جغرافیہ پڑھاتے تھے۔

۵- میرزا خان داغ دہلوی –
مشہور شاعر سے علامہ اقبال نے شروع میں ایک آدھ بار ہی اشعار پر اصلاح لی،
جلد ہی انھوں نے لکھا کہ اب اصلاح ضرورت نہیں ہے۔

6- پروفیسر آرنلڈ –
گورنمنٹ کالج لاہور میں علامہ اقبال کے فلسفے کے استاد تھے۔ آپ کی خواہش اور انتظامات پر علامہ اقبال انگلستان اعلی تعلیم کے لیے تشریف لے گئے۔ علامہ اقبال کی پی ایح ڈی کے بھی نگران تھے۔

۷- پروفیسر میک ٹیگرٹ – ٹرینٹی کالج میں علامہ اقبال کے استاد تھے، جہاں سے علامہ اقبال نے باریٹ لا کی ڈگری لی۔
۸- پروفیسر آر اے نکلسن – ٹرینٹی کالج میں علامہ اقبال کے استاد تھے۔ آپ نے علامہ اقبال کی پہلی فارسی مثنوی “اسرار خودی” کا انگریزی ترجمہ کیا جو لندن سے چھپا اور یورپ اور امریکہ میں بہت مشہور ہوا۔ اس ادبی کاوش پر علامہ اقبال کو “سر” کا خطاب دیا گیا۔
۹- پروفیسر فرالین سینچل –
ہائیڈل برگ یونیورسٹی میں علامہ اقبال کی استاد تھیں۔ علامہ اقبال ان کے پڑھانے کے انداز سے بہت متاثر تھے۔
۱۰- ایما ویگا ناسٹ – یا
فراؤلین ویگے ناسٹ
(ایک ہی شخصیت ہیں)
ہائیڈل برگ جرمنی میں علامہ اقبال کی جرمن زبان کی اتالیق تھیں ۔
۱۱- پروفیسر سینے شال
ہائیڈل برگ یونیورسٹی جرمنی میں اقبال کو تعلیم و تدریس اور جرمن سیکھنے میں مدد دی ۔
12.پروفیسر آر اے نکلسن –
ٹرینٹی کالج میں علامہ اقبال کے استاد تھے۔ آپ نے علامہ اقبال کی پہلی فارسی مثنوی “اسرار خودی” کا انگریزی ترجمہ کیا جو لندن سے چھپا اور یورپ اور امریکہ میں بہت مشہور ہوا۔ اس ادبی کاوش پر علامہ اقبال کو “سر” کا خطاب دیا گیا.
13.

تبصرہ کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Shopping Cart
Scroll to Top